کیا زمینی پلیٹوں کی تباہ کن ساختمائی سیلابِ نوح کے بعد کی ارضیات کی وضاحت کرتی ہیں؟

by on
Also available in English and 中文
Share:

یہ نظریہ کہ براعظم ایک دوسرے سے علیحدہ ہو کر دور سرک گئے ہیں سب سے پہلے تخلیق کے ایک حامی اینٹو نیو سنیڈر کی طرف سے دیا گیا تھا۔ اُس نے جب پیدایش 1باب 9-10 آیات کے بیان پر غور کیا تو وہاں پرچونکہ لکھا ہے کہ خُدا نے سارے پانی کو ایک جگہ جمع کیا اور اُسے سمندر کہا اور باقی زمین کو خشکی کہا تو اُس نے یہ خیال ظاہر کیا کہ ممکن ہے کہ ابتدائی طور پر اِس زمین کی ساری خشکی آپس میں جڑی ہوئی ہو اور براعظم علیحدہ علیحدہ نہ ہوں۔ اُس نے مزید اِس بات پر بھی غور کیا کہ مغربی افریقہ اور جنوب مشرقی امریکہ کی ساحلی پٹیوں پر جب غور کیا جائے تو اُن کی بناوٹ سے ظاہر ہوتا ہے کہ یہ پہلے ایک ہی خشک زمین کا حصہ تھیں اور اگر اِنہیں واپس لایا جانا ممکن ہوتا تو یہ با آسانی ایک دوسرے کے ساتھ بالکل درست انداز سے جڑ سکتی تھیں۔

مکمل آرٹیکل کے مطالعہ کے لئے یہاں پر کلک کیجئے